Aaj TV News

BR100 4,617 Increased By ▲ 7 (0.15%)
BR30 17,726 Increased By ▲ 106 (0.6%)
KSE100 45,083 Increased By ▲ 128 (0.28%)
KSE30 17,828 Increased By ▲ 90 (0.51%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,393,887 7,539
DEATHS 29,162 25
Sindh 533,496 Cases
Punjab 469,540 Cases
Balochistan 34,131 Cases
Islamabad 122,098 Cases
KP 187,983 Cases

لندن: انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل ایتھرٹن نے ایک بار پھر انگلینڈ کرکٹ بورڈ کے چیئرمین این واٹمور کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ دورہ پاکستان منسوخ کرنے کا فیصلہ انگلش کرکٹ کی جگ ہنسائی کا سبب بنا۔

انگلش کرکٹ بورڈ کے سبکدوش ہونےوالے چیئرمین این واٹمور کو جاتے جاتے بھی تنقید کا سامنا ہے۔

این واٹمور نے جمعرات کو اپنے عہدے سے سبکدوشی کا اعلان کیا تھا، واٹمور کے کارناموں پر تبصرہ کرتے ہوئے مائیکل ایتھرٹن نے ایک کالم میں ان پر شدید تنقید کی۔

مائیکل ایتھرٹن نے کہا کہ واٹمور کے بارے میں اندازہ اس وقت ہی ہوگیا تھا جب انہوں نے دورہ پاکستان منسوخ کرنے کا اعلان کیا تھا۔

سابق انگلش کپتان اور مایہ ناز براڈ کاسٹرمائیکل ایتھرٹن نے کہا کہ جس طرح انگلینڈ نے وعدہ کیا، پھر وعدے سے مکرا، کوئی وجہ نہیں بتائی اور بے کار سی پریس ریلیز کے پیچھے چھپنے کی کوشش کی گئی، اس سے انگلش کرکٹ کی جگ ہنسائی ہوئی۔

سابق کرکٹرکا مزیدکہنا تھا کہ اس ایک فیصلے نے انگلینڈ کو بیک وقت مغرور، دوہرا اور کمزور دکھادیا۔

مائیکل ایتھرٹن نے کہا کہ جب اس فیصلے پر سب نے تنقید اور احتجاج کیا تو مشیروں کی رائے پر ایک نام نہاد معافی کی کوشش کی گئی ، یہ معافی سے زیادہ مزید الجھن تھی جس نے کام اور خراب کیا۔

سابق انگلش کپتان نے کہا کہ پاکستان کے دورے کی منسوخی سے پی سی بی کو تو مالی نقصان ہوا مگر انگلش کرکٹ بورڈ کے وقار کو بھی ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔

واضح رہےکہ 20 ستمبر کو انگلینڈ کرکٹ بورڈ کی جانب سے پاکستان کا دورہ ختم کرنے کا باضابطہ اعلان کیا گیا تھا۔