Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,825 372
DEATHS 28,767 6
Sindh 476,674 Cases
Punjab 443,453 Cases
Balochistan 33,506 Cases
Islamabad 107,887 Cases
KP 180,316 Cases

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صحت کے اجلاس میں انکشاف ہوا کہ پاکستان فارمیسی کونسل کے اہلکاررجسٹریشن کیلئے دوران انسپیکشن رشوت کا تقاضا کرتےہیں۔

سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صحت کا اجلاس سینٹر ڈاکٹر ہمایوں مہمند کی زیر صدارت ہوا۔

اجلاس میں پاکستان فارمیسی کونسل ممبران نے کمیٹی کو بتایا کہ لینجنڈ کالج نے اپریل میں اپلائی کیا تھا لیکن انسپیکشن کے بعد معلوم ہوا کہ کالج معیار پر پورا نہیں اترتا،کالج انتظامیہ نے موقف اختیار کیا کہ پاکستان فارمیسی کانسل کے لوگوں نے این او سی کے لیے پچاس لاکھ روپے مانگے ۔ اس مسئلےکو نیب کی طرف بھیجا جائے ۔

سینیٹررانا محمود نے کہا کہ ایک قومی ادراے کی جانب سے رشوت مانگنا شرمناک ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ رشوت کے اس سلسلے کوروکنا چاہیے۔ کالج کے معاملے پر سینٹر ڈاکڑ خافظ عبدالکریم کی سربرائی میں سب کمیٹی بنا دی گئی۔ کمیٹی ایک ہفتے میں اپنی رپورٹ پیش کرے ۔

اجلاس میں انسانی اعضاء کی پیوندکاری کا پرائیوٹ ممبر بل زیر غور آیا۔

چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ کوئی ایسا ادراہ موجود نہیں کہ جو ڈونر اور رسیور کو رجسٹر کرے۔ ایک اچھے کام کا غلط استعمال نہیں ہونا چاہیے۔