Aaj.tv Logo

حیدرآباد: دعا زہرہ کیس کی طرز کا ایک اور کیس سامنے آگیا

30 جون 2022
<p>لڑکی کے والد ناصر آئیں نے کہا کہ میری بیٹی کو ان لوگوں نے اغوا کیا جو انسانی سودا گری کا کام کرتے ہیں: ویڈیو: اسکرین گریب</p>

لڑکی کے والد ناصر آئیں نے کہا کہ میری بیٹی کو ان لوگوں نے اغوا کیا جو انسانی سودا گری کا کام کرتے ہیں: ویڈیو: اسکرین گریب

حیدرآباد: حیدرآباد میں دعا زہرہ کیس کی طرز کا کیس سامنے آگیا۔

حیدرآباد کے علاقے پریٹ آباد کی بارہ سالہ ام ہانی 21 مئی کو سلائی سینٹر کے لیے گھر سے نکلی اور لاپتہ ہوگئی، والد ناصر آرائیں کی مدعیت میں 22 مئی کو پنیاری تھانے میں لڑکی کی گم شدگی کی ایف آئی آر درج کرلی گئی۔

تاہم چند روز قبل 24 مئی کو ام ہانی کا نکاح نامہ سامنے آگیا ہے۔

اس حوالے سے والد ناصر آرائیں کا کہنا ہے کہ بیٹی ام ہانی نے کراچی کی عدالت میں درخواست دائر کی ہے اور ہمیں فریق بنایا گیا ہے ہم عدالت گئے تھے لیکن انصاف نہیں ملا۔

لڑکی کے والد نے کہا کہ میری بیٹی کو ان لوگوں نے اغوا کیا جو انسانی سودا گری کا کام کرتے ہیں، ہماری شادی کو 18 سال مکمل نہیں ہوئے تو بیٹی 18 سال کی کیسے ہوگئی؟، ام ہانی کی عمر تعلیمی سرٹیفکیٹ کے مطابق 12 سال ہے۔

دوسری جانب صوبائی وزیر ترقی نسواں شہلا رضا نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے حیدرآباد میں محکمے کے افسران کو ناصر آرائیں کی قانونی معاونت کی ہدایت کی ہے۔