Aaj News

شہباز گل 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے، تحقیقاتی ٹیم تشکیل

عدالت نے کوہسار پولیس کو شہباز گل کو جمعے کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔
اپ ڈیٹ 10 اگست 2022 03:02pm
<p>عدالت نے کوہسار پولیس کو شہباز گل کو جمعے کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔
فوٹو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اسکرین گریب</p>

عدالت نے کوہسار پولیس کو شہباز گل کو جمعے کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ فوٹو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اسکرین گریب

اسلام آباد کی تھانہ کوہسار پولیس نے شہباز گل کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں پیش کیا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نے گزشتہ روز گرفتار ہونے والے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شہباز گل کو 2روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ پولیس نے شہباز گل سے تحقیقات کے لیے 6 رکنی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے دی۔

بدھ کے روز ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد میں پی ٹی آئی رہنما شہباز گل کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی، ڈیوٹی مجسٹریٹ ویسٹ عمر بشیر نے کیس کی سماعت کی۔

اسلام آباد کی تھانہ کوہسار پولیس نے شہباز گل کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں پیش کیا۔

عدالت میں اسلام آباد پولیس کی جانب سے شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گی، جس پر پی ٹی آئی رہنما کے وکیل فیصل چوہدری نے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی مخالفت کی۔

عدالت نے پولیس اور شہباز گل کے وکیل کے دلائل سننے کے بعد جسمانی ریمانڈ کی استدعا پرفیصلہ محفوظ کرلیا۔

محفوظ کیا گیا فیصلہ کچھ دیر بعد سناتے ہوئے عدالت نے شہباز گل کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر منظور کرتے ہوئے کوہسار پولیس کو شہباز گل کو جمعہ 12 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے حکم دیا کہ 2 روز میں شہباز گل سے تفتیش کرکے عدالت کو آگاہ کیا جائے۔

شہباز گل کے خلاف بغاوت پر اکسانے کے مقدمے کا تحریری حکم نامہ جاری

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے شہباز گل کےخلاف بغاوت پراکسانے کے مقدمے کا تحریری حکم نامہ جاری کردیا۔

عدالت نے شہباز گل کا طبی معائنہ اور آڈیو کی فارنزک ٹیسٹ کرانے کی ہدایت کردی۔

عدالت نے کہاکہ ریکارڈ کے مطابق شہبازگل کے خلاف الزامات پرجسمانی ریمانڈ ضروری ہے، شہباز گل کی ریکارڈ آواز سے مشابہت کے لیے فارنزک ٹیسٹ بھی ضروری ہے۔

شہباز گل کی پیشی کے موقع پرعدالت کے باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے اور اسلام آباد پولیس کی اضافی نفری تعینات کی گئی تھی جبکہ صحافیوں کو بھی کمرہ عدالت میں جانے سے روک دیا گیا تھا۔

شہباز گل کوپتہ نہیں کہاں سےلایا گیا ہے، وکیل فیصل چوہدری

سماعت کے بعد شہبازگل کے وکیل فیصل چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شہباز گل کوپتہ نہیں کہاں سے لایا گیاہے، شہباز گل کے کپڑوں پر خون کے دھبے لگے ہیں۔

فیصل چوہدری نے کہا کہ عدالت سے استدعا کی ہے کہ جوڈیشل ریمانڈ دیا جائے، جوڈیشل ریمانڈ پر ہم قانون کے مطابق درخواست دیں گے۔

پی ٹی آئی رہنماء کے وکیل فیصل چوہدری نے شہباز گل کا میڈیکل کرانے کا مطالبہ بھی کیا۔

میرے بیان میں کچھ ایسا نہیں جس سے شرمندگی ہو، شہباز گل

عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے رہنما شہباز گل نے کہاکہ میرے بیان میں کچھ ایسا نہیں جس سے شرمندگی ہو، ایک محب الوطن کا بیان ہے، اپنی فوج سے پیار کرنے والا بیان ہے کسی کو اکسانے کی کوشش نہیں کی، ایسے بیورو کریسی کے افسران جوغلط بات کررہے ہیں، ان کے بارے میں بات کی۔

شہباز گل کے خلاف بغاوت کے کیس میں مزید پیش رفت

تحریک انصاف کے رہنماشہباز گل کے خلاف بغاوت کے کیس میں مزید پیش رفت سامنے آئی ہے۔

پولیس نےشہباز گل سے تحقیقات کےلیے 6 رکنی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے دی۔

پولیس کے مطابق تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ایس ایس پی انویسٹی گیشن کریں گے،ایس پی سٹی ،ڈی ایس پی اور ایس ایچ او ٹیم کا حصہ ہوں گے۔

وزارت داخلہ کی ہدایت پر تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی گئی، تحقیقاتی ٹیم ڈی آئی جی آپریشن کورپورٹ کرے گی۔

شہباز گل کی رہائی کے لیے درخواست تیار

ادھرپی ٹی آئی رہنما شہباز گل کی رہائی کے لیے درخواست تیار کر لی گئی ہے، درخواست اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر کی جائے گی۔

درخواست پی ٹی آئی کے رہنماء فیصل چوہدری اور بابر اعوان کی جانب سے دائر کی جائے گی ۔

شہباز گل کی گرفتاری کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آگئی

دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل کی گرفتاری کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آگئی۔

فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ پولیس اہلکار یونیفارم میں ہیں، اس سے قبل پی ٹی آئی نے دعویٰ کیا تھا کہ شہباز گل کو سادہ کپڑوں میں ملبوس لوگ لے گئے۔

فوٹیج کے مطابق سیکیورٹی اہلکار شہباز گل کو گاڑی سے باہر آنے کا اشارہ کررہے ہیں، پی ٹی آئی رہنماء کے باہر نہ آنے پر گاڑی کا شیشہ توڑا گیا اور شہباز گل کو باہر لایا گیا۔

سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق شہباز گل پولیس اہلکاروں کے ساتھ چلتے ہوئے گاڑی میں جاکر بیٹھے ۔

اس کے علاوہ فوٹیج میں شہباز گل کے ڈرائیور کو گاڑی آرام سے سائیڈ پر لگاتے دیکھا جاسکتا ہے۔

شہباز گل بغاوت کے مقدمے میں بنی گالا سے گرفتار

گزشتہ روز سابق وزیراعظم عمران خان کے چیف آف اسٹاف شہباز گل کو بغاوت کے مقدمے میں بنی گالا سے گرفتار کیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق شہبازگل کے خلاف تھانہ بنی گالا میں سٹی مجسٹریٹ کی مدعیت میں بغاوت پراکسانے کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا، انہوں نے ٹی وی ٹاک شو میں ریاستی اداروں کے سربراہان کے خلاف بیانات دیے تھے۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق شہباز گل نے ریاستی اداروں کے سربراہان کے خلاف بیان بازی کی تھی، ان کے بیان اور تقریر کا مقصد فوج میں بغاوت پھیلانا اور سازش کرنا تھا، شہباز گل کا مقصد فوجی جوانوں کو اپنے افسران کا حکم نہ ماننے کی ترغیب دینا تھا۔

پولیس ذرائع کے مطابق گرفتاری کے وقت سینئر پولیس افسران موقع پر موجود تھے جبکہ پی ٹی آئی رہنما کو گرفتاری کے بعد تھانے لے جانے کے بجائے نامعلوم مقام پر منتقل کیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق مقدمے میں اداروں اور ان کے سربراہوں کے خلاف اکسانے سمیت دیگر دفعات شامل کی گئی تھیں۔

pti leader

اسلام آباد

imran khan

shehbaz gill

district and session court

Comments are closed on this story.