Aaj News

ونڈوز کمپیوٹر استعمال کرنے والوں کیلئے خطرے کی گھنٹی بجا دی گئی

اس خطرے سے چھٹکارا پانے کیلئے کیا اقدامات اٹھانے ہوں گے؟
شائع 27 اگست 2022 05:57pm
<p>اسکرین شاٹ</p>

اسکرین شاٹ

مائیکروسافٹ کے آپریٹنگ سسٹم “ونڈوز” پر چلنے والے کمپیوٹرز کے صارفین کیلئے ایک حفاظتی انتباہ جاری کیا گیا ہے، جس میں سسٹم کو فوری طور پر اپ ڈیٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق سیکیورٹی کا یہ نیا مسئلہ “مائیکروسافٹ ڈیفنڈر” میں دریافت ہوا ہے۔ یہ وہ سافٹ ویئر ہے، جو آپ کے کمپیوٹر کو وائرس، میلویئر اور دیگر خطرات سے محفوظ رکھتا ہے۔

یہ خطرے کو اعلیٰ زمرے کے تحت نشان زد کیا گیا ہے، جو ہیکرز کو حفاظتی اقدامات کو آگاہ کیے بغیر آپ کے سسٹم تک رسائی کی اجازت دینے کے قابل ہے۔

ونڈوز صارفین کو “ونڈوز ڈیفنڈر” کے کریڈینشل گارڈ ٹول میں سیکیورٹی خدشات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، جو زیادہ تر ونڈوز پی سی پر پہلے سے انسٹال ہوتا ہے۔

بنیادی طور پر اس کا مطلب یہ ہے کہ حملہ آور آپ کے سسٹم میں موجود تمام ڈیٹا تک رسائی حاصل کر سکتا ہے اور مشین یا ونڈوز ڈیفنڈر کو آگاہ کئے بغیر آپ کی تمام سیکیورٹی سیٹنگز کو نظرانداز کر سکتا ہے۔ جس کی وجہ سے آپ کے حق راز داری کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔

رپورٹ میں ونڈوز ڈیفنڈر کے کریڈینشل گارڈ (Windows Defender Credential Guard) کے استحقاق میں اضافہ اور سیکیورٹی بائی پاس کے خطرات کی اطلاع دی گئی ہے، جو ایک مقامی تصدیق شدہ حملہ آور کو حفاظتی پابندیوں کو نظرانداز کرنے اور ٹارگٹڈ سسٹم پر اعلیٰ اجازتیں حاصل کرنے میں مدد دے سکتی ہے۔

اس خطرے سے بچنے اور اپنے نظام کو محفوظ بنانے کے لیے کونسے اقدامات ضروری ہیں؟

مائیکروسافٹ نے پہلے ہی اس مسئلے کے لیے ایک سافٹ ویئر فکس جاری کر دیا ہے۔ ونڈوز پی سی صارفین سے کہا گیا ہے کہ وہ ان نئے ورژنس کے ساتھ اپنے پلیٹ فارم پر مسئلہ کو حل کریں گے۔ اپنے سسٹم کو ابھی اپ ڈیٹ کریں۔

ونڈوز ڈیفنڈر کے ساتھ یہ مسئلہ بڑے پیمانے پر نظر آتا رہا ہے، کیونکہ اس خامی سے متاثر ہونے والے ونڈوز ورژنس کی ایک لمبی فہرست ہے۔

ونڈوز 10 کے زیادہ تر ورژن اس فہرست میں ہیں، اس کے علاوہ ونڈوز 11 کے ورژن بھی شامل ہیں۔

آپ کے ونڈوز سرور 2022، 2019 اور 2016 ورژن ہو تو احتیاط برتی جائے، کیونکہ ان ورژنس سے بھی خطرات میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

hackers

Virus

Malware

Windows PC

Comments are closed on this story.