Aaj News

اتوار, جون 23, 2024  
16 Dhul-Hijjah 1445  

ممکنہ طور پر خلائی مخلوق تک پہنچانے والے 7 ستارے دریافت

انتہائی ذہین تہذیب کی تلاش میں ڈائسن اسفیئرز میگا اسٹرکچرز کا تصور کلیدی کردار ادا کر رہا ہے
شائع 18 مئ 2024 03:23pm

فلکیات کے ماہرین نے ایسے سات ستارے دریافت کرنے کا دعویٰ کیا ہے جن پر کوئی انتہائی ذہین مخلوق ہوسکتی ہے۔ محققین کا کہنا ہے کہ یہ ساتوں ساتوں فلکیات کے حلقوں میں معروف ڈائسن میگا اسٹرکچرز کے حامل ہیں۔

پراجیکٹ ہیفیسٹوز کے تحت دریافت ہونے ان ستاروں کی مدد سے ماہرین کو خلا میں کسی انتہائی ذہین مخلوق کی موجودگی کے حوالے سے تحقیق میں غیر معمولی حد تک مدد ملے گی۔

نئے ستاروں کی دریافت ٹیکنالوجیز سے متعلق انسان کی مہارت کو چیلنج کرنے والا عامل ہے۔ اب ماہرین کو نئے سِرے سے کائنات کی تفہیم کے حوالے سے سوچنا پڑے گا۔

ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق انسان خلا میں جس قدر آگے بڑھ رہا ہے، کسی انتہائی ذہین مخلوق کی موجودگی کے امکان کے حوالے سے تحقیق کا جوش و خروش بھی بڑھتا جارہا ہے۔

نئے ستاروں کی دریافت ڈائسن اسفیئر میگا اسٹرکچرز کے تصور کی بنیاد پر ہوئی ہے۔ سائنس دانوں کا خیال ہے کہ ان میگا اسٹرکچرز کے ذریعے انتہائی ذہین خلائی مخلوق دوسرے ستاروں سے توانائی کشید کرتی ہے۔

ڈائسن اسفیئر کا تصور طبعیات دان فریمین جے ڈائسن نے 1960 میں پیش کیا تھا۔ خلائے بسیط میں کسی مخلوق اور اُس کی شاندار ذہانت کی تلاش کے حوالے سے یہ ٹیکنوسفیئرز غیر معمولی اہمیت کے حامل ہیں۔

SEVEN STARS DISCOVERED

DYSON SPHERES MEGASTRUCTURES

QUEST FOR SUPER INELLIGENT SPECIES