Aaj TV News

BR100 4,678 Decreased By ▼ -9 (-0.18%)
BR30 18,623 Decreased By ▼ -17 (-0.09%)
KSE100 45,507 Decreased By ▼ -105 (-0.23%)
KSE30 17,926 Decreased By ▼ -16 (-0.09%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,333,521 5,034
DEATHS 29,029 10
Sindh 505,930 Cases
Punjab 454,372 Cases
Balochistan 33,729 Cases
Islamabad 111,855 Cases
KP 182,419 Cases

لاہور: پاکستان کے سابق ٹیسٹ کرکٹرز محمد خلیل اور عبدالرحمن قومی ٹیم کی شکست پر پھٹ پڑے۔ دونوں سابق اسٹارز نے شکست کو کوچنگ اسٹاف کی ناقص حکمت عملی قراردے دیا۔

محمد خلیل کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ کے خلاف قومی ٹیم سے اسی قسم کی کارکردگی کی توقع نہ تھی، نیوزی لینڈ پہنچتے ہی کپتان کا ان فٹ ہونا اور پھر دیگر مسائل سے کھلاڑی متاثر ہوئے، ٹیم انتظامیہ کی کوئی حکمت عملی دکھائی نہیں دے رہی۔

دوسری جانب سابق ٹیسٹ اسپنر عبدالحمن نے کہا کہ نیوزی لینڈ کے ہاتھوں جس طرح شکست ہوئی افسوس ناک ہے، دن بدن ہماری کرکٹ کا معیار نیچے جارہا ہے۔ سمجھ نہیں آرہی کہ ٹیم انتظامیہ کس کھلاڑی کے ساتھ کام کررہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مصباح الحق اور وقار یونس سے بہتر کوچز موجود ہیں، کوچنگ کا بہتر علم رکھنے والوں کو لایا جائے۔

راولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر کا کہنا ہے کہ پاکستان کرکٹ تنزلی کی طرف جارہی ہے، وہ وقت دور نہیں جب ٹیمیں ہمیں بلانا چھوڑ دیں گی۔

سابق اسپیڈ اسٹار نے مزید کہا کہ دفاعی حکمت والی سوچ جو چلی آرہی ہے اسے بدلنا پڑے گا، کان پکڑ کر کرکٹ کو ٹھیک کرنا ہوگا۔

سابق کپتان رمیز راجا کہتے ہیں غیر مستقل مزاج پاکستان ٹیم اب غیرملکی دوروں پر ہارنے میں مستقل مزاج ہوچکی ہے، یہ ٹیم 3 یا 4 روز میں ہارنے والی ٹیم بن گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ٹیم کی پرفارمنس لمحہ فکریہ ہے، فینز کی اب دلچسپی نہیں رہی۔