Aaj.tv Logo

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے جعلی ڈگری پر مقدمہ درج کرنے کا الیکشن کمیشن کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا،جسٹس عمرعطا بندیال نے کہا ہے کہ نااہلی کا فیصلہ عدالت ہی دے سکتی ہے، ایچ ای سی کوئی عدالت نہیں جو جعلی ڈگری پر کسی کو نااہل قرار دے سکے۔

جسٹس عمرعطاء بندیال کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نے پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی فیصل زمان کی اپیل پر سماعت کی۔

وکیل فیصل زمان نے مؤقف اپنایا کہ مؤکل کی ڈگری کی یونیورسٹی نے تصدیق کی ،الیکشن کمیشن کے دائرہ اختیارمیں یہ کیس نہیں آتا۔

جسٹس عمرعطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ آئین کے مطابق نا اہلی کا فیصلہ عدالت ہی دے سکتی ہے، ایچ ای سی کوئی عدالت نہیں جو جعلی ڈگری پر کسی کو نااہل قرار دے سکے،ایچ ای سی کی سفارشات برقرار نہیں رکھی جا سکتیں، الیکشن کمیشن نے بھی شواہد ریکارڈ نہیں کئے ۔

دلائل مکمل ہونے پر سپریم کورٹ نے پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی فیصل زمان کی اپیل منظورکرتے ہوئے الیکشن کمیشن کا فیصلہ کالعدم قراردے دیا ۔

فیصل زمان کیخلاف الیکشن کمیشن نے 2013 میں جعلی ڈگری پر مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا تھا۔