Aaj TV News

BR100 5,282 Increased By ▲ 24 (0.46%)
BR30 27,601 Increased By ▲ 46 (0.17%)
KSE100 48,305 Increased By ▲ 53 (0.11%)
KSE30 19,479 Decreased By ▼ -59 (-0.3%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 941,170 1,239
DEATHS 21,689 56
Sindh 327,604 Cases
Punjab 343,926 Cases
Balochistan 26,201 Cases
Islamabad 82,099 Cases
KP 135,877 Cases

اسلام آباد:وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے اقتصادی سروے 21-2020 جاری کردیا اور ان کا کہنا تھا کہ معیشت ریکور ہورہی ہے ہم اب استحکام کی جانب بڑھ رہے ہیں۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخارجہ شوکت ترین نے کہا کہ اس سال فروری میں کورونا نے پھر سے سر اٹھایا اور اب اللہ کا شکر ہے کہ کورونا کنٹرول میں آگیا ہے، کورونا کی وجہ سے معیشت کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا لیکن معیشت نے ریکوری کرنا شروع کردی ہے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ ترسیلات زر ثابت کرتی ہیں کہ اوورسیز کا عمران خان سے تعلق ہے، ترسیلات زر 29 فیصد سے گروتھ کررہی ہیں، ترسیلات زر ہمارے لےں اللہ تعالیٰ نے فرشتہ بنا کر بھیج دیا اور کرنٹ اکاؤنٹ ہمارا سرپلس چل رہا ہے، زرمبادلہ کے ذخائر جو پہلے 2018 میں 7 ارب ڈالر تھے اب 16 ارب ڈالرتک ہیں۔

شوکت ترین نے کہا کہ ایف بی آر کی ٹیکس وصولیاں بہتر چل رہی ہے اور ٹیکس وصولیاں گزشتہ سال کے مقابلے میں 11 فیصد سے زیادہ ہیں۔

وفاقی وزیر خزانہ نے بتایا کہ پیش گوئی نہیں کرسکتا کہ گرے لسٹ سے وائٹ میں آجائیں گے، تین چار ماہ سے ماہانہ گروتھ 50 فیصد سے زیادہ ہے، صنعتوں میں 26 فیصد گروتھ آیا ہے۔

شوکت ترین نے مزید کہا کہ ہم چاہ رہے ہیں مہنگائی روکنے کیلئے پیداوار بڑھائیں، ہم زراعت میں پیداوار کو بڑھائیں گے، اب ہمیں اپنے انفراسٹرکچر کو بھی ٹھیک کرنا ہوگا، زراعت پرزور دینا ہوگا اور کوشش کریں گے برآمدات میں اضافہ ہو۔

وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا تھا کہ ہم نے بجٹ 5.7 ٹریلین کا رکھا ہے، 1.7 ٹریلین قرض بڑھا ہے، پچھلے سال 3.7 ٹریلین قرضہ بڑھا جس سے اس سال آدھا ہے، شرح سود 13.2 سے کم کرکے 7 فیصد تک لائی گئی، ہم گروتھ کو 5، 6، 7 فیصد تک لے کر جائیں گے، ہم نوجوانوں کو روز گار دلانے کیلئے گروتھ لائیں گے، ہم 4 فیصد شرح نمو پر ہیں، 7 سے 8 فیصد شرح نمو حاصل کرنے کی کوشش کریں گے، پائیدار شرح نمو کے دیرپا استحکام کیلئے اقدامات کریں گے۔

شوکت ترین نے کہا کہ غریب آدمی کیلئے اس مرتبہ بجٹ میں توجہ دی گئی ہے، ہم نے غریب کی زندگی آسان کرنی ہے، ان کے خواب کو پورا کرنا ہے اور اس بجٹ میں غریب ہمارے لے نمبر ون ترجیح ہوگا۔

وفاقی وزیرخزانہ کا مزید کہنا تھاکہ آئی ٹی 50 فیصد گروتھ کررہی ہے، اس کو 100 فیصد پر لے جائیں گے، بھارت نے 10 سال میں آئی ٹی کو 100 گنا بڑھایا، کیا ہم آئی ٹی کو 50 فیصد مزید نہیں بڑھاسکتے؟ روایتی برآمدات کے علاؤہ بھی دیگر مصنوعات کی برآمدات بڑھائیں گے، ہمیں برآمدات اور براہ راست سرمایہ کاری بڑھانی ہے۔