Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,453 431
DEATHS 28,761 8
Sindh 476,494 Cases
Punjab 443,379 Cases
Balochistan 33,491 Cases
Islamabad 107,848 Cases
KP 180,254 Cases

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے قتل کے ملزم کی ضمانت کیس کی سماعت کے دوران خیبرپختونخوا پراسیکیوشن ٹیم اور پولیس پر اظہار برہمی کرتے ہوئے صوبائی پولیس کرپٹ اور نااہل قرار دےدیا، جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیئے کہ پانچویں جماعت کا بچہ بھی خیبرپختونخوا پولیس سے بہتر تفتیش کر لے گا،عوام کاپیسہ کیوں ضائع کیاجارہاہے،بہترہے پورا خیبرپختونخو پولیس محکمہ ختم کردیں۔

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2رکنی بینچ نےقتل کے ملزم محمد امجد کی ضمانت سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

عدالت عظمیٰ نے ٹرائل مکمل نہ کرنے پر خیبرپختونخوا کی پراسیکیوشن ٹیم اور پولیس پر برہمی کا اظہار کیا۔

جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے ریمارکس دیئے کہ پشاور ہائیکورٹ نے 3ماہ میں ٹرائل مکمل کرنے کا حکم دیا تھا لیکن پراسیکیوشن نے ہائیکورٹ کے حکم کی پرواہ ہی نہیں کی، پراسیکیوشن نے ہائیکورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی کی،فروری کو چالان جمع ہوا اور اب تک تحقیقات مکمل نہیں ہو سکیں۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیئے کہ گولیوں کے21خول ملےمگرریکارڈمیں صرف2 لکھی گئیں ،باقی گولیاں پتانہیں آسمان پرچلی گئیں یا زمین میں دب گئیں،خیبرپختونخوا کی پولیس کرپٹ اورنااہل ہے ،خیبرپختونخوا پولیس کوتفتیش کرنےکاطریقہ ہی نہیں آتا،پانچویں جماعت کا بچہ خیبر پختونخوا پولیس سے بہتر تفتیش کر لے گا، پولیس تفتیش سے متعلق کچھ ٹی وی ڈرامےدیکھ لےتوکافی کچھ سیکھ لیں گے۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے مزید کہا کہ اگر تفتیش کا طریقہ ہی نہیں آتا تو عوام کا پیسہ کیوں ضائع کیا جارہا ہے ،ایسےکام کرنا ہے تو بہتر ہے پورا خیبرپختونخوا پولیس محکمہ ختم کردیں۔

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل خیبرپختونخو ا شمائل عزیزسے مکالمہ کرتےہوئے کہاکہ آپ کو تو قانون کا پتا ہی نہیں، بچوں کی طرح آپ کو دوبارہ قانون پڑھانا پڑےگا،ایڈووکیٹ جنرل خیبر پختونخوا آفس عدالت کا وقت ضائع نہ کرے، ایڈووکیٹ جنرل عدالت میں تیاری اور معاونت کیلئے قانونی مواد لے کر آئیں۔

عدالت نے کہا کہ ٹرائل کورٹ ملزم محمد امجد کے کیس کا جلد از جلد فیصلہ کرے،پراسیکیوشن نے ہائیکو رٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی کی، 18 فروری کو چالان جمع ہوا اور اب تک تحقیقات مکمل نہیں ہو سکیں۔

سپریم کورٹ نے ٹرائل کورٹ کو کیس کا جلد فیصلہ کرنے کا حکم دیتے ہوئے درخواست ضمانت نمٹا دی۔

یاد رہے کہ حویلیاں کےرہائشی محمدامجدپرپڑوسن کوفائرنگ کرکےقتل کرنےکاالزام ہے۔