Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,825 372
DEATHS 28,767 6
Sindh 476,674 Cases
Punjab 443,453 Cases
Balochistan 33,506 Cases
Islamabad 107,887 Cases
KP 180,316 Cases

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے ڈکیتی 13مقدمات میں ملوث ملزم کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست خارج کردی،ضمانت خارج ہونےپر ملزم کو عدالت عظمیٰ کے احاطے سے گرفتار کر لیا گیا۔

سپریم کورٹ میں جسٹس عمر عطابندیال اور جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے ڈکیتی 13مقدمات میں ملوث ملزم اعجاز کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست پر سماعت کی۔

سماعت کے دوران جسٹس عمر عطابندیال نے ریمارکس دیئے کہ ضمانت قبل ازگرفتاری کا قانون میں کوئی ذکر ہی نہیں ،یہ راستہ عدالتی فیصلے کے ذریعے 1948 میں نکالا گیا،ضمانت قبل ازگرفتاری اسی صورت ہوتی ہے اگر مقدمہ بظاہر بدنیتی پر مبنی ہو۔

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے ریمارکس دیئے کہ ملزم پر چوری ڈکیتی اور لوٹ مار کے 13 مقدمات ہیں جبکہ ضمانت قبل ازگرفتاری خاص حالات میں ملنے والی رعایت ہے ،عادی ملزم کو خصوصی رعایت نہیں دی جا سکتی۔

بعدازاں عدالت نے ملزم کی ضمانت قبل از گرفتاری درخواست خارج کر دی اور پولیس کی جانب سے ملزم کو احاطہ عدالت سے گرفتا ر کر لیاگیا۔