Aaj TV News

BR100 4,644 Decreased By ▼ -89 (-1.89%)
BR30 20,295 Decreased By ▼ -45 (-0.22%)
KSE100 45,304 Decreased By ▼ -240 (-0.53%)
KSE30 17,708 Decreased By ▼ -103 (-0.58%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,269,806 572
DEATHS 28,392 6
Sindh 468,164 Cases
Punjab 439,307 Cases
Balochistan 33,204 Cases
Islamabad 106,749 Cases
KP 177,553 Cases

بھارتی ریاست اتر پردیش کے شہر علی گڑھ میں ایک عجیب واقعہ پیش آیا ہے، جہاں ایک شخص نے اپنی بیوی کو روانہ نہ نہانے کی وجہ سے طلاق دیدی۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق علی گڑھ کے رہائشی امان نامی شخص نے اپنی بیوی کو مبینہ طور پر روزانہ نہ نہانے کی بنیاد پر تین طلاقیں دے دیں۔

یہ معاملہ ویمن پروٹیکشن سیل میں شکایت کی صورت میں درج کروانے کے بعد سامنے آیا ہے۔

ویمن پروٹیکشن سیل بھارت کا وہ ادارہ ہے جو شادی شدہ جوڑوں کو تعلقات بچانے کیلئے کاؤنسلنگ سیشن فراہم کرتا ہے۔

پروٹیکشن سیل کے ایک عہدیدار کی جانب سے بتایا گیا کہ ان کے پاس ایک خاتون نے شکایت درج کرائی ہے کہ اس کے شوہر نے روزانہ نہ نہانے کا بہانہ بناکر اسے تین طلاقیں دے دی ہیں۔

عہدیدار کا مزید کہنا تھا کہ ہم جوڑے اور ان کے والدین کو ان کی شادی بچانے کے لیے مشاورت فراہم کر رہے ہیں، جبکہ خاتون نے اس بات کی تصدیق کی کہ وہ اپنے شوہرکے ساتھ رہنا چاہتی ہے اور اپنی شادی کو بچا کر ہنسی خوشی زندگی گزارنا چاہتی ہے۔

عہدیدار نے بتایا کہ خاتون کی درخواست پر جب ان کے شوہر سے رابطہ کیا گیا تو شوہرکا کہنا تھا کہ وہ اپنی بیوی کو طلاق دینا چاہتا ہے کیوں کہ وہ روزانہ نہیں نہاتی ہیں اور جب بھی ان سے نہانے کا کہا جائے تو وہ ان سے لڑنا شروع کردیتی ہے۔

پروٹیکشن سیل کے مطابق عہدیداوں کی جانب سے شوہر کو یہ سمجھانے کی کوشش کی جارہی ہے کہ یہ معمولی نوعیت کا مسئلہ ہے جو کہ بغیر طلاق دیے بھی حل کیا جاسکتا ہے تاہم اس کے باوجود اگر ان کی علیحدگی ہو گئی تو یہ عمل بچے کی پرورش کو متاثر کرسکتا ہے۔

ویمن پروٹیکشن سیل کے عہدیدار کا کہنا تھا کہ ان دونوں کی شادی دو سال قبل ہوئی جبکہ ان کا ایک سال کا بیٹا بھی ہے۔