Aaj.tv Logo

اسلام آباد: شہباز شریف کی کابینہ میں تمام اپوزیشن جماعتوں کو نمائندگی ملے گی, جو آج پاکستان کے 23ویں وزیراعظم منتخب ہونے کا امکان ہے۔

روزنامہ جنگ کی رپورٹ کے مطابق کابینہ میں مسلم لیگ (ن) کے 12 اور پیپلز پارٹی کے 7 وزراء ہوں گے جبکہ جے یو آئی (ف) کو چار، ایم کیو ایم پاکستان کو دو، بی این پی مینگل، اے این پی، جمہوری وطن پارٹی اور بلوچستان عوامی پارٹی کو ایک ایک وزارت دی جائے گی۔ ْ

دریں اثنا مسلم لیگ ن سے خواجہ آصف، سعد رفیق، خرم دستگیر، احسن اقبال، مریم اورنگزیب، شائستہ پرویز ملک، رانا ثناء اللہ اور مرتضیٰ جاوید کی کابینہ میں شمولیت کا امکان ظاہر کیا ہے۔

ساتھ ہی آزاد امیدواروں محسن داوڑ اور اسلم بھوتانی اور مسلم لیگ (ق) کے طارق بشیر چیمہ کو بھی کابینہ میں شامل کیے جانے کا امکان ہے۔

دوسری جانب سینیٹ میں قائد ایوان کے لیے اعظم نذیر تارڑ کا نام زیر غور ہے جبکہ پیپلز پارٹی سینیٹ سے شیری رحمان یا مصطفی نواز کھوکھر میں سے کسی ایک کو وزارت دے گی۔

تاہم بلاول بھٹو اگلے وزیر خارجہ ہو سکتے ہیں جبکہ کابینہ کے لیے شازیہ مری کا نام بھی زیر غور ہے۔

یاد رہے کہ پی پی پی کے چیئرمین نے گزشتہ ہفتے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ پارٹی نئی حکومت میں ان کے کردار کے بارے میں فیصلہ کرے گی۔

جے یو آئی (ف) نے مطالبہ کیا ہے کہ گورنر بلوچستان یا خیبر پختونخوا میں سے کسی ایک کو پارٹی سے بنایا جائے جبکہ پنجاب کا گورنر پیپلز پارٹی سے اور سندھ کا گورنر ایم کیو ایم پی سے ہوگا۔