Aaj.tv Logo

وزیراعظم شہباز شریف نے ملک کے پسماندہ طبقے کو پانچ بنیادی اشیائے ضروریہ کم نرخوں پر فراہم کرنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت یوٹیلٹی اسٹورز کے حوالے سے اعلی سطح کا اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزراء بشمول مفتاح اسماعیل، مخدوم مرتضی محمود اور متعلقہ اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

شہباز شریف نے خیبر پختونخوا اور بلوچستان میں یوٹیلٹی اسٹور کے اقدامات کو سراہا جب کہ انہوں نے غریب اور پسماندہ طبقے کے لئے بڑے ریلیف کا اعلان کا کرتے ہوئے کہا کہ 5 بنیادی اشیاء ضروریہ کو اگلے مالی سال کے لئے کم نرخوں پر فراہم کی جائے۔

وزیراعظم نے کراچی میں یوٹیلٹی اسٹورز کے نیٹ ورک میں تو سیع کی بھی منظوری دی اور کہا کہ کراچی میں یوٹیلٹی اسٹور کی کم تعداد کسی قدر منظور نہیں تاہم کراچی میں یوٹیلٹی اسٹورز کی تعداد میں اضافے کا جامع منصوبہ دو ہفتے میں پیش کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پسماندہ طبقے کو اس وقت ریلیف کی سب سے ذیادہ ضرورت ہے، انہیں ریلیف فراہم کرنے کے لئے حکومت ہر قیمت خرچ کرنے کو تیار ہے اور اس طبقے کو اشیاءِ ضروریہ پر ریلیف دینا حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ سبسڈی کا نظام شفاف اور ڈیجیٹل جب کہ مختلف قسم کی سبسڈیاں اکٹھی کرکے ایک جامع نظام بنایا جائے، جس کے تحت خصوصی طور پر پسماندہ طبقے کے ریلیف کو ترجیح دی جائے۔ سبسڈی کے نظام میں اصلاحات کیلئے وزیرخزانہ، وزیرصنعت و پیداوار اور وزیرتخفیف غربت تعاون سے حکمت عملی تشکیل دیں۔