Aaj News

کیا پاکستان میں بلیک آؤٹ کا اندھیرا اپنے ساتھ بھارت کو بھی لے ڈوبا

'ہم یہ مسئلہ دیکھ رہے ہیں، آپ زیادہ پُرجوش نہ ہوں'
شائع 24 جنوری 2023 12:35pm

پاکستان میں گزشتہ روزبجلی کے بڑے بریک ڈاؤن کے نتیجے میں تقریباً 220 بلین افراد بجلی سے محروم ہوئے ، پاورڈویژن ذرائع کے مطابق اس کی وجہ توانائی بچت کے لئے رات کو بجلی گھر بند کئےجانے کے بعد پیر کی صبح وولٹیج کے اتار چڑھاؤ کے باعث سسٹم کا دوبارہ شروع نہ ہوسکنا ہے۔

اسی دوران برطانوی نژاد پاکستانی صحافی گل بخاری نے سوشل میڈیا پر ایک تصویر شیئر کی جس میں دعویٰ کیا گیا کہ ملک بھر میں بجلی کی بندش کے درمیان پاکستان دنیا کے نقشے سے ”مٹا“ ہوا دکھائی دے رہا ہے۔ لیکن اس پوسٹ پرکیے جانےوالے تبصروں میں صارفین نے ان پر واضح کیا کہ اصل معاملہ کیا ہے۔

اس پوسٹ پر بیشترتبصرے پاکستانی صارفین کی جانب سے کیے گئے۔

ٹوئٹرصارف نمیرا نے لکھا، ’ ہم نے اپنے ساتھ ساتھ بھارت کا ایک حصہ اور کچھ سمندر بھی ڈبو دیا’۔

پاکستانی صحافی سید ساجد حسن نے گُل بخاری کیلئے طنزًا لکھا، ’ ملک ٹھیک ہے اور بلیک آؤٹ صرف ایندھن بچانے کے لیے ہے، آپ کی خواہش تھی لیکن ہم ٹھیک ہیں، ایندھن بچانے کے لیے پاکستان میں بلیک آؤٹ معمول کی بات ہے اور ہم یہ مسئلہ دیکھ رہے ہیں ، آپ زیادہ پرجوش نہ ہوں’۔

بھارتی صارف ورنیکا راج چوہان نے محظوظ ہوتے ہوئے لکھا، ’ میں تصدیق کرسکتی ہوں کہ ہماچل پردیش، اتراکھنڈ اور جموں کشمیر میں روشنی ہے۔ یہ ایک ایڈٹ کی گئی تصویر ہے’۔

تصویرکی حقیقت جاننے کے لیے کھوج لگائیں توعلم ہوتا ہے کہ بین القوامی سرحدوں سے نابلد کسی اناڑی نے پاکستان کے نقشے پرسیاہ رنگ کے کیلئے ونڈوزپینٹ کے برش ٹول کا استعمال کیا کیونکہ گُل بخاری کی شیئرکردہ تصویر میں بھارت اور بحیرہ عرب دونوں کا کچھ حصہ بھی ’تاریکی‘ میں ڈوبا ہے۔

ریورس سرچ کرنے آپ جانیں گے کہ اس تصویر کا ماخذ دراصل وکی پیڈیا ہے۔

اب یہ دیکھنے کے لیے کہ پاکستان میں بجلی کی خرابی نہ ہونے پرکیا صورتحال ہوتی ہے، سیٹلائٹ کی لائیوتصویر اورپرانی تصاویر کا موازنہ کرنے سے علم ہوا کہ تئیس جنوری کوشب 10:30بجے پاکستان کے بیشترحصہ درحقیقت اندھیرے میں ڈوبا تھا لیکن یہ صرف یہیں محدود تھا نہ کہ بھارت کو بھی متاثرکررہا تھا۔

گزشتہ 3 روزکا جائزہ لینے پرمزید علم ہوتا ہے کہ تب بھی صورتحال وہی تھی۔ بیس ، اکیس اور بائیس جنوری کو رات ساڑھے 10 بجےپاکستان کے بیشتر حصے میں اندھیرا چھایا تھا۔

20 جنوری

21 جنوری

22 جنوری

یعنی اس بات کا بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ صحافی کی شیئرکردہ تصویرمیں ترمیم کی گئی تھی، پاکستان میں بجلی کی بندش کے باعث رات کے اوقات میں زیادہ تراندھیراہی چھایا رہتا ہے اور بھارت کی ’تاریکی‘ پینٹ برش کی مرہون منت ہی ہے۔

india

پاکستان

Electricity Short fall

Blackout

تبصرے
1000 حروف
مقبول ترین