Aaj TV News

BR100 4,820 Decreased By ▼ -32 (-0.66%)
BR30 25,669 Decreased By ▼ -3 (-0.01%)
KSE100 44,978 Decreased By ▼ -208 (-0.46%)
KSE30 18,443 Decreased By ▼ -42 (-0.23%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 725,602 4584
DEATHS 15,501 58
Sindh 269,126 Cases
Punjab 250,459 Cases
Balochistan 20,321 Cases
Islamabad 66,380 Cases
KP 99,595 Cases

سعودی عرب کے مغرب میں مدینہ منورہ کے علاقے میں "الرائس" کی فضا میں رات کے وقت آسمان پر کہکشاں یا ملکی وے میں ایسے حیران کن اور دلفریب مناظر دیکھنے کو ملتے ہیں جنہیں دیکھنے والے حیرت زدہ رہ جاتے ہیں۔

ہماری اس کہکشاں میں موجود ٹمٹاتے ستاروں کے یہ مناظر ہر رات نہیں دیکھے جا سکتے۔ ان مناظر کے لیے ایک خاص وقت متعین ہے جس میں ان پرلطف نظاروں سے لطف اٹھایا جا سکتا ہے۔

سعودی عرب کے ایک فوٹو گرافر اور فکلیاتی علوم کی ایسوسی ایشن کے بانی فہد الشنبری نے "ملکی وے" کے ان منفرد مناظر کو اپنے کیمرے میں محفوظ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے الشنبری نے کہا کہ شمالی سعودی عرب کے سیاحتی ماحول کے بعد مدینہ منورہ میں مقام بدر کے قریب الرائس کے ساحل پر رات کے وقت منظر قابل دید ہوتا ہے۔

خاص طور پر نماز فجر سے قبل اگر موسم صاف ہو "ملکی وے" کے نظارے دیکھنے والے ہوتے ہیں۔

مدینہ منورہ کے علاقے میں رات کے وقت آسمان پر کہکشاں
مدینہ منورہ کے علاقے میں رات کے وقت آسمان پر کہکشاں

الشنبری کا کہنا ہے کہ میں نے بہت سے فکلیاتی مظہر دیکھے ہیں مگر الرائس کے ساحل سے رات کے وقت دیکھا جانے والا جادوئی منظر آج تک اور کہیں دکھائی نہیں دیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ موسم بہار کے یہ دن روشنیوں سے دور رات کی تاریکی میں آسمان کی وسعتوں کے نظاروں کے لیے زیادہ موزوں ہوتا ہے تاہم اس کے لیے ضروری ہے کہ فضا میں بادل یا گردو وغبار نہ ہو۔

فکلیاتی فوٹو گرافر الشنبری نےمزید کہا کہ الرائس سے دکھائی دینے والی ملکی وے 'خم دار' شکل میں ہے۔ اس کہکشاں میں کھربوں ستارے اور سیارے موجود ہیں۔ اس ملکی وے کے اطراف میں ذرات، گیسوں اور بادلوں کا وسیع زخیرہ ہے جس نے ملکی وے کو گھیرے میں لے رکھا ہے۔

مدینہ منورہ کے علاقے میں رات کے وقت آسمان پر کہکشاں
مدینہ منورہ کے علاقے میں رات کے وقت آسمان پر کہکشاں

خیال رہے کہ ملکی وے 'درب التبانہ' میں ایک اندازے کے مطابق 2 کھرب سے 4 کھرب کے درمیان ستارے اور سیارے موجود ہیں۔