Aaj TV News

BR100 4,822 Decreased By ▼ -37 (-0.75%)
BR30 23,477 Decreased By ▼ -389 (-1.63%)
KSE100 45,597 Decreased By ▼ -412 (-0.89%)
KSE30 18,029 Decreased By ▼ -150 (-0.82%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,230,238 2,333
DEATHS 27,374 47
Sindh 452,267 Cases
Punjab 424,701 Cases
Balochistan 32,796 Cases
Islamabad 104,472 Cases
KP 171,874 Cases

'میری کامیابی ثابت کرتی ہے کہ ٹرانس جینڈرز کسی سے کم نہیں'

05 ستمبر 2021
موقع ملا تو خواتین اور ٹرانس کمیونٹی سمیت اقلیتی برادری کے لیے ضرور کام کروں گی
موقع ملا تو خواتین اور ٹرانس کمیونٹی سمیت اقلیتی برادری کے لیے ضرور کام کروں گی

ملکی تاریخ کی پہلی مس ٹرانس شاہرہ رائے کا کہنا ہے کہ انہیں پاکستان کی پہلی بیوٹی کوئین بننے کی بےحد خوشی ہے۔

نجی ویب چینل کو دیے گئے انٹرویو میں شاہرہ رائے نے کہا کہ ان کی کامیابی ثابت کرتی ہے کہ ٹرانس جینڈر بھی کسی سے کم نہیں ہیں۔

شاہرہ رائے نے بتایا کہ ان کا تعلق سیالکوٹ سے ہے لیکن وہ لاہور میں پیدا ہوئیں اور دس سال کی عمر میں دبئی چلی گئیں۔ زیادہ تر وقت باہر گزارا اور تعلیم بھی وہیں سے حاصل کی۔

شاہرہ رائے نے اے لیول کے بعد ماس کمیونیکیشن میں ماسٹرز بھی کیا۔ مس ٹرانس کا اصل نام ذائشہ بیگ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں اس مقام تک پہنچانے میں ان کے بھائی کا بڑا کردار ہے۔

شاہرہ رائے کا مزید کہنا تھا کہ ان کی خواہش ہے کہ پاکستان کا نام پوری دنیا میں عزت سے لیا جائے۔ گرین پاسپورٹ کو اس کا اصل مقام ملے۔

مس ٹرانس نے کہا کہ انہیں موقع ملا تو وہ خواتین اور ٹرانس کمیونٹی سمیت اقلیتی برادری کے لیے ضرور کام کریں گی۔

واضح رہے کہ مس ٹرانس مقابلہ کینیڈا میں ہوا تھا۔ فائنل میں شاہرہ رائے نے 10 شرکاء کو ہرا کر مس پاکستان بیوٹی کوئین کا اعزاز اپنے نام کیا۔