Aaj.tv Logo

اسلام آباد:وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ نیاپاکستان اورسعودی وژن2030 کامقصدترقی کا حصول اور تجارتی روابط کافروغ ہے،پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات وقت کی کسوٹی پر ہمیشہ ثابت قدم رہے۔

وزیراعظم عمران خان نے سعودی جریدے کو دیئے گئے ایک انٹرویومیں کہا ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دیرینہ برادرانہ تعلقات ہیں، دونوں ممالک کے تعلقات وقت کی کسوٹی پر ہمیشہ ثابت قدم رہے ہیں،ہم ان تعلقات کو سود مندتذویراتی شراکت داری میں بدلنےکےخواہاں ہیں۔

عمران خان نےکہا کہ سعودی پاکستان انویسٹمنٹ فورم کا انعقاد خوش آئند ہے،دونوں ممالک تجارتی تعلقات اور سرمایہ کاری کو فروغ دینا چاہتے ہیں،فورم سے تجارت ، کاروباری سرگرمیاں اور سرمایہ کاری کے شعبوں میں نئی راہیں تلاش کرنے کا موقع ملا،مجھے امید ہے کہ فورم دونوں ممالک کے نجی اور کارپوریٹ سیکٹر کو قریب لانے کیلئے مواقع فراہم کرے گا۔

وزیراعظم عمران خان کا مزیدکہنا تھا کہ دیرپا ترقی کے اہداف کیلئے پاکستان کی ترجیحات جیو پولیٹکس سے جیو اکنامکس کی جانب گامزن ہیں،نیاپاکستان اور سعودی وژن2030سماجی و اقتصادی اصولوں پر مبنی ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ نیا پاکستان اور سعودی وژن کا مقصد ترقی کا حصول اور تجارتی روابط کا فروغ ہے ،سعودی عرب کے وژن 2030 کیلئے پاکستانی افرادی قوت اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔

وزیراعظم کا مزیدکہنا تھا کہ وژن 2030 کے تحت مختلف شعبوں میں اصلاحات متعارف کرانے پر سعودی قیادت کی کاوشیں قابل تعریف ہیں۔