Aaj TV News

BR100 4,607 Decreased By ▼ -61 (-1.3%)
BR30 20,274 Decreased By ▼ -618 (-2.96%)
KSE100 44,629 Decreased By ▼ -192 (-0.43%)
KSE30 17,456 Decreased By ▼ -66 (-0.38%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,265,650 603
DEATHS 28,300 20
Sindh 466,154 Cases
Punjab 438,133 Cases
Balochistan 33,133 Cases
Islamabad 106,504 Cases
KP 176,950 Cases

اسلام آباد ہائیکورٹ نے ینگ ڈاکٹرز کے حق میں ڈاکٹرعبدالقدیرخان کی آخری دستخط شدہ پٹیشن کل سماعت کے لیے مقرر کر دی ہے۔

درخواست میں پی ایم سی کے کنڈکٹ آف ایگزامنیشن ریگولیشن 2021 کو کاالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔ جسٹس بابر ستار سماعت کریں گے ۔

وقاص ملک ایڈووکیٹ نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی طرف سے دستخط شدہ پٹیشن خود دائر کی جس میں وفاق، سیکرٹری صحت، سیکرٹری داخلہ، پی ایم سی، سیکرٹری قانون و انصاف اور میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست گزار کے مطابق احتجاج کرنے والے ینگ ڈاکٹرز پر پولیس کے لاٹھی چارج سے دنیا بھر میں ایٹمی پاکستان کا امیج خراب ہوا۔ طلبا کو مناسب وقت دیئے بغیر امتحان کا نیا سسٹم متعارف کرانا درست نہیں۔ آئین پاکستان کے تحت طلبا کو میرٹ پر اعلی تعلیم کی سہولت ملنی چاہئے۔

وقاص ملک ایڈووکیٹ نے عبدالقدیر خان کی درخواست ان کی وفات کے بعد خود دائر کی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ انسانیت کی خدمت کا جذبہ رکھنے والے قوم کے مستقبل کے معماروں کے ساتھ سلوک پر افسردہ ہوں۔ پی ایم ڈی سی کو تحلیل کر کے پی ایم سی قائم کرنے سے خرابی پیدا ہوئی۔ سٹوڈنٹس کے لیے نیا ٹیسٹ متعارف کرا کے چھ ہزار روپے فیس وصول کی جا رہی ہے۔

ایک اندازے کے مطابق اس فیس سے 75 کروڑ روپے تک کی رقم اکٹھی کی جا رہی ہے۔ کمرشل اپروچ کو روک کر میرٹ پر سٹوڈنٹس کو پروموٹ کرنے کی پالیسی اپنائی جائے ۔