Aaj News

آرام دہ جوتوں میں بھی پیروں میں جلن کیوں ہوتی ہے؟

آرام دہ جوتوں میں بھی پیروں میں جلن کیوں ہوتی ہے؟ ہرشخص کو نت نئے ڈیزائنز کے جوتے پہنے کا شوق ہوتا ہے، لیکن جب جوتوں...
اپ ڈیٹ 13 مئ 2022 12:16pm

ہرشخص کو نت نئے ڈیزائنز کے جوتے پہنے کا شوق ہوتا ہے لیکن جب جوتوں میں آرام نہ ملے، تو وہ جوتے انسان کے دل سے اتر جاتے ہیں۔

آج نیوز کے مارنگ شو “آج پاکستان” میں میزبان سدرہ اقبال نے سوال کیا کہ آرام دہ جوتوں میں پیروں میں جلن کیوں ہوتی ہے؟

enter image description here

جس کے جواب میں ڈاکٹر ذاہد نے کہا کہ عام افراد جن کو کوئی مسئلہ نہیں ہوتا، تو وہ ہرجگہ جوتے پہنے رہتے ہیں، جس کی وجہ سے ان کے پاؤں کی ساخت ایک ڈبے میں بند ہوکر رہ جاتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسی وجہ سے ایسے افراد کے پاؤں کے پٹھے جام ہوجاتے ہیں، لیکن جب آپ ان کو ریلیف دیتے ہیں، تو سکون کا سانس لیتے ہیں۔

ڈاکٹر ذاہد نے بتایا کہ یہ شکایت (بلند فشارخون) یعنی بلڈ پریشر کی وجہ سے نہیں بلکہ وٹامن ڈی کی کمی کی وجہ سے ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ لوگ کہتے ہیں وٹامن ڈی سورج سے ملتا ہے تو پھر جنوبی و مشرقی ایشیا کے لوگوں کو کمی نہیں ہونی چاہیئے۔

سدرہ اقبال نے پوچھا کہ کیا وٹامن ڈی صبح کے سورج سے حاصل کیا جائے، جس کے جواب میں ڈاکٹر نے کہا کہ جب آپ صبح ورزش کیلئے باہر نکلتے ہیں، تو آپ کے جسم پر سورج کی شعاعیں براہ راست نہیں لگتی کیونکہ آپ نے فُل آستینیں پہنی ہوتی ہیں۔

میزبان نے اپنے سوال میں پوچھا کہ پاؤں میں حرارت اور سُن ہونے کی وجہ ہوسکتی ہے، جس پر ڈاکٹر ذاہد نے کہا کہ وٹامن بی 12 کی کمی سمیت ذیابطیس، گردوں کے مسائل، تب دق (ٹی بی) کی ایک دوا کے بھی اثرات ہوسکتے ہیں۔

سدرہ اقبال پوچھا کہ اگر پاؤں سن ہورہے ہیں، تو اس کو نظر انداز نہ کریں لیکن جوتوں کے بارے میں بتائیں جس پر ڈکٹر ذاہد نے بتایا کہ عام طور پر جوتے سامنے چوڑے ہوں تاکہ پاؤں میں تکلیف نہ ہو جبکہ بچوں کے جوتے سامنے سے زیادہ کشادہ ہوں۔

تاہم میزبان نے پاؤں کی سوجن کے متعلق پوچھا تو ڈکٹر ذاہد نے کہا کہ یہ بڑی عمر کے افراد کو ہوتا ہے جبکہ اس کی اہم وجہ یورک ایسڈ کا بڑھ جانا ہے۔

آج پاکستان

health tips

Comments are closed on this story.