Aaj News

ملک بھر میں آج یومِ عاشور عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے

حساس شہروں میں موبائل فون سروس جلوس کے اختتام تک معطل رہے گی۔
اپ ڈیٹ 09 اگست 2022 01:19pm
<p>فوٹو( فائل)</p>

فوٹو( فائل)

حضرت امام حسین علیہ السلام اور ان کے رفقاء کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے یوم عاشور آج مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ ملک بھر میں منایا جارہا ہے۔

امام حسین کی لازوال قربانی کی یاد میں عاشورہ محرم کے جلوس برآمد ہونگے۔ مختلف شہروں میں ماتمی جلوس اور شام غریباں منعقد ہوں گی۔

ملک بھرمیں عاشورہ کے جلوسوں کے راستوں پرسیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔حساس شہروں میں موبائل فون سروس جلوسوں کے اختتام تک معطل رہے گی۔جلوس کے داخلی اور خارجی راستے کنٹینرز اور خاردار تاروں سے سیل کیے گئے ہیں۔

کراچی

کراچی میں یوم عاشورکا مرکزی جلوس نشترپارک سے برآمد ہوگیا ہے، جلوس امام بارگاہ حسینیہ ایرانیاں پر اختتام پذیر ہوگا، شرکاء نماز ظہرین ایم اے جناح روڈ پرادا کریں گے۔

مجلس عزا کے اختتام پر بوتراب اسکاؤٹس کی قیادت میں مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہوا، جو مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ حسینیہ ایرانیان کھارادر پر اختتام پذیر ہوا۔

جلوس کی سیکیورٹی کیلیے فول پروف انتظام کیے گئے ہیں، رینجرزاور پولیس کے سات ہزار سے زائد اہلکار تعینات ہیں ، سینٹرل کنٹرول روم میں سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے جلوس کی نگرانی کی جارہی ہے۔

شرکاء کو داخلی راستے پر سخت چیکنگ کے بعد جلوس میں شرکت کی اجازت دی جارہی ہے ۔

مرکزی جلوس عزا کی سیکیورٹی کے لیے پولیس و رینجرز سمیت دیگر سیکیورٹی اداروں کے اہلکاروں کے علااسکاؤٹس بھی موجود تھے۔

سیکیورٹی انتظامات کو یقینی بنانے کے لیے صوبائی وزیر شرجیل انعام میمن اور سعید غنی نے پولیس ہیڈ آفس کراچی میں سندھ پولیس کے قائم کردہ مانیٹرنگ سیل کا جائزہ لیا،انہوں نے یوم عاشورہ سے ایک روز قبل جلوس کے مختلف راستوں کا دورہ بھی کیا۔

لاہور

رائے ونڈ سے امام بارگاہ قصر سکینہ سے جلوس شبیہ ذوالجناح برآمد ہوگیا۔

جلوس کے ہمرا ہ پولیس کی بھاری نفری موجود ہے،سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

مرکزی جلوس مانگا روڈ سے ہوتا ہوا مونگا چوک میں نما ز ظہرین ادا کریگا۔

جبکہ سیکیورٹی کے پیش نظر موبائل فون سروس معطل کی گئی ہے۔

راولپنڈی

راولپنڈی میں روایتی مرکزی جلوس امام بارگاہ عاشق حسین تیلی محلہ سمیت چار مقامات سے برآمد ہونگے۔

امن و امان کے قیام کے لئے حکومتی و انتظامی سطح پرسخت حفاظتی انتظامات کیے گئے ہیں، پولیس کی معاونت کے لئیے رینجرز کے دستے موجود ہونگے جبکہ پاک فوج آن کال ہوگی ۔ شہرمیں ڈبل سواری پر پابندی کے ساتھ موبائل فون سروس اور میٹرو بس سروس بھی معطل رہے گی۔

مرکزی جلوس کی فضائی نگرانی کے ساتھ جلوس کے تمام راستوں پر کلوز سرکٹ کیمروں سے مانیٹرنگ کے لیے کنٹرول روم بھی قائم کیا گیا ہے۔

جلوس کے راستوں پر چھتوں پر ماہر نشانہ باز کے علاوہ ریسکیو 1122 اور محکمہ شہری دفاع سمیت رضاکار تنظیم شاہین فورس کے اہلکاربھی تعینات ہونگے۔

مرکزی جلوس جامع مسجد روڈ سے ہوتا ہوا امام بارگاہ قدیمی میں پہنچ کر اختتام پذیر ہوگا جہاں شام غریباں برپا ہوگی۔

پشاور

پشاور میں یوم عاشور پر بارہ جلوس برآمد ہونگے۔

شہر میں پہلا جلوس دن گیارہ بجے امام بارگاہ آغا سید علی شاہ رضوی سے برآمد ہوگا۔

ایس ایس پی آپریشنز نے کہا ہے کہ شہربھرمیں11ہزاراہلکار تعینات کیے گئے ہیں، پولیس کو پاک فوج و رینجرز کے دستوں کی معاونت حاصل ہے۔

ایس ایس پی کاشف عباسی کے مطابق حساس مقامات کے روٹس کو 100سے زائد سی سی ٹی وی سے مانیٹرکیا جا رہا ہے، یوم عاشور کا پہلا ماتمی جلوس کوچی بازار سے دن11 بجے برآمد ہوگا۔

ایس ایس پی کا کہنا تھا کہ مرکزی علم ذوالجناح کا جلوس 4بجے امام بارگاہ حیدرشاہ سے برآمد ہوگا جبکہ اندرون شہرکوٹریفک کیلئے مکمل طورسیل کردیا گیا۔

کوئٹہ

کوئٹہ میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس الصبح علمدارروڈ سے برآمد ہوا، جو اپنے روایتی راستوں پررواں دواں ہے۔

ہزارہ ٹاؤن،مچھ اور دیگر علاقوں سے آنے والے جلوس، مرکزی جلوس میں شامل ہوں گے۔

جلوس اسپنی روڈ جی پی او چوک، زرغون روڈ ،حالی روڈ سے ہوتے ہوئےعلمدارروڈ پرہی اختتام پزیر ہوگا۔

فیصل آباد

فیصل آباد میں یوم عاشورہ کا مرکزی جلوس امام بارگاہ عزاخانہ شبیر سے برآمد ہوگیا۔

جلوس کے شرکاء گھنٹہ گھر چوک پہنچیں گے۔ جس کے بعد مجلس اور ماتم ہوگا۔

جلوس کے راستوں میں سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کیے گئے ہیں، تمام راستوں کو خاردار تاریں لگا کر سیل کیا گیا۔

سکھر

یوم عاشور کے موقع پر سکھر میں مختلف چھوٹے بڑے جلوس برآمد ہونا شروع ہوگئے۔

جبکہ مرکزی جلوس انجمن امامیہ امام بارگاہ سے بعد نماز ظہرین برآمد ہوگا۔

حیدرآباد

حیدرآباد میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس قدم گاہ مولا علی سے برآمد ہوکر اپنے مقررہ راستوں پر گامزن ہے۔

جلوس میں عزادار نوحہ خوانی اور سینہ کوبی کرکے شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کررہے ہیں۔

خانیوال

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے خانیوال میں بھی یوم عاشور کے موقع پر اٹھاون مجالس اور بیاسی جلوسوں کی سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لئے انتظامات مکمل کر لیے گئے اور دوہزار سے زائد پولیس کی نفری تعینات کردی گئی ہے۔

حافظ آباد

حافظ آباد میں یوم عاشور کے موقعہ پر تعزیہ، عَلم اور ذوالجناح کے چھتیس جلوس نکالے جا رہے ہیں جن کی سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔

عارف والا

عارف والامیں10چھوٹےبڑےماتمی جلوس نکالےجائیں گے۔

اسسٹنٹ کمشنر کے مطابق مرکزی جلوس امام بارگاہ ڈی بلاک سے برآمد ہوگا۔ جلوسوں کے راستوں پر500 سے زیادہ اہلکارسیکیورٹی فرائض سرانجام دیں گے۔

کندھ کوٹ

کندھ کوٹ میں یوم عاشور کا پہلہ جلوس گولیمار سے برآمد کیا گیا۔

سید لعل شاہ امام بارگاہ سے نکالے جانے والے جلوس کے سیکیورٹی انتظامات فل پروف کیے گئے ہیں، پولیس و رینجرز جلوس کی نگرانی کر رہی ہے۔

ضلع بھر سے 40 سے جلوس برآمد ہوں گے، یوم عاشور کے موقع پر سندھ بلوچستان کی سرحدی پٹی پر انتظامات سخت کیے گئے ہیں۔

سبی

سبی میں یوم عاشور کا ماتمی جلوس مرکزی امام بار گاہ سے حسینہ سے برآمد کیا گیا ہے۔

اس حوالے سے سیکیورٹی کے فل پروف انتظامات کئے گئے ہیں۔

جلوس کے گزر گاہوں پر خار دار تاریں اور ٹنیٹ لگا کر سیل کردئیے گئے ہیں۔

Comments are closed on this story.